35 دن کا شیر خوار بچہ کرونا وائرس کا شکار

انٹرنیشنل

قاہرہ (این این آئی)مصر میں ایک شیرخوار بچے کے کرونا وائرس سے متاثر ہونے کا اعلان کیا گیا۔ اس بچے کی عمر صرف 35 دن ہے اور یہ ملک میں اس وبائی مرض کی لپیٹ میں آنے والا سب سے کم عمر فرد ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق اس بچے کو مصر کے شمالی صوبے الدقہلیہ میں واقع منیت النصر ہسپتال میں لایا گیا۔ بچے کی پیدائش کو پانچ ہفتے گزرے ہیں اور اس کا تعلق دیرب الخضر نامی گاؤں سے ہے۔طبی ذرائع کے مطابق ابھی تک یہ معلوم نہیں کہ اس شیرخوار بچے کو کرونا وائرس کس ذریعے سے لگا۔ بچہ پھیپھڑوں

کے شدید انفیکشن میں مبتلا تھا جس کے بعد اسے ہنگامی طور پر ہسپتال لایا گیا۔ ہسپتال میں بچے کا ٹیسٹ لیا گیا جس کے بعد یہ نتیجہ سامنے آیا کہ وہ کرونا وائرس سے متاثر ہے۔ذرائع نے بتایا کہ مذکورہ بچے کو ایک علاحدہ کمرے میں الگ تھلگ رکھا گیا ہے تا کہ دیگر افراد کو یہ وائرس منتقل نہ ہو۔ علاوہ ازیں بچے کے گھر والوں کے خون کے نمونے بھی لیے گئے ہیں تا کہ معلوم ہو سکے کہ آیا ان میں سے کوئی کرونا سے متاثر تو نہیں۔مصر کی وزارت صحت نے اعلان کیا کہ ملک میں کرونا کے 227 نئے کیسوں کا اندراج ہوا ہے۔ ان کے علاوہ مزید 13 افراد فوت ہو گئے ہیں جب کہ مزید 39 مریض صحت یاب ہو گئے۔ اس طرح اب تک مصر میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی مجموعی تعداد 4309 ہو چکی ہے۔ ان میں سے 1114 افراد صحت یاب ہو کر گوشہ نشینی کے طبی مراکز سے رخصت ہو چکے ہیں جب کہ 307 افراد نے موت کو گلے لگایا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر