پانی کے چھینٹے کیوں ڈالے ، سفاک قاتلوں نے 3سالہ بچی کے باپ کو گولیوں سے چھلنی کر دیا ،اہلخانہ کو کیا سنگین دھمکی دینی شروع کر دیں ؟ انصاف کا مطالبہ

پاکستان

سرگودھا(این این آئی)شہر کے علاقہ محمدیہ کالونی میں تین سالہ بچی کے 35 سالہ باپ کو پانی کے چھینٹے ڈالنے پر فائرنگ کر کے قتل کر دیا گیا اور ملزمان پیروی پر اہلخانہ کو دھمکیاں دینے لگے۔مقتول کی نعش پوسٹمارٹم کے لئے ہسپتال منتقل کر دی گئی۔ورثاء نے پولیس پر عدم اعتماد کرنے ہوئے ڈی پی او سے نوٹس لینے اور وزیراعلی سے انصاف و تحفظ کی فراہمی کا مطالبہ کرتے رہے۔زرائع کے مطابق سرگودھا شہر کے گنجان آباد علاقہ محمدیہ کالونی گلی نمبر 11 کا 35 سالہ شیخ سرفراز علاقہ میں پکوڑے سموسوں کی ریڑی لگاتا جس کا حسب معمول

گلی میں پانی کے چھڑکاؤ پر چھینٹے پڑنے سے محلہ کے سبزی فروش رفیع سے توں تکرار اور جھگڑا ہوا۔اسی رنجش پر سبزی فروش رفیع نے مسلح افراد خرم وغیرہ کو بلوایا تو دوبارہ توں تکرار میں رفیع ،خرم وغیرہ نے فائرنگ کر کے ریڑی والے شیخ سرفراز کو قتل کر دیا اور فرار ہونے کی بجائے پیروی کرنے پر مقتول کے اہلخانہ کو دھمکیاں دیتے رہے۔تاہم مقتول کی نعش پوسٹمارٹم کے لئے ڈی ایچ کیو ہسپتال منتقل کر دی گئی۔جہاں مقتول کے لواحقین نے تھانہ اربن ایریا پولیس پر عدم اعتماد کر دیااور تین سالہ بچی کی ماں بیوہ اور بھائی نے ڈی پی او سے واردات کا نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہوئے وزیراعلی پنجاب سے انصاف اور تحفظ مانگ لیا۔بیوہ کا کہنا ہے کہ میرے شوہر کو ناحق قتل کیا گیا اور اب ہمیں جان سے مار ڈالنے کی دھمکیاں دے رہے ہیں۔پولیس سے بااثر ملزمان کے خلاف کاروائی کر کے انصاف کی توقع نہیں اس لئے وزیراعلی ہمیں تحفظ اور انصاف دلائیں اور آر پی او ڈی پی او نوٹس لیتے ہوئے قاتلوں کو گرفتار کر کے قرار واقعی سزا دلائیں ۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر