درندگی کی انتہا کر دی گئی، 7 سالہ بچی کی ریپ کے بعد آنکھیں ضائع کر دی گئیں

سوشل میڈیا‎‎

نئی دہلی(آن لائن)بھارت میں ڈاکٹرز جمعہ کو سات سالہ بچی کی بصارت کو بچانے کے لئے سرتوڑ کوششیں کررہے ہیں جسے ریپ کا نشانہ بنانے کے بعد اس کی آنکھیں ضائع کردی گئی تھیں تاکہ وہ حملہ آوروں کی شناخت نہ کرسکے ، یہ بات پولیس نے کہی۔وسطی ریاست مدھیا پردیش میں پولیس نے اس حملے پر ایک اکیس سالہ شخص کو حراست میں لے رکھا ہے ۔سینیئر پولیس اہلکار ہیمنت چوہان نے غرملکی خبررساںادارے کو بتایا کہ لڑکی کو ایک خالی گھر لے جایا گیا جب وہ دوستوں کیساتھ کھیل رہی تھی ، وہ وہاں سے جب برآمد ہوئی

تو اس کے ہاتھ بندھے ہوئے تھے اور اس کی آنکھیں بری طرح سے زخمی تھیں۔چوہان نے کہا کہ مشتبہ شخص جو قریب میں ہی رہتا ہے اورحراست میں لیا جاچکا ہے، نے اعتراف جرم کرلیا ہے ، ملزم نے بچی کی آنکھوں میں اپنی انگلیاں انتہائی زور سے دبائیں ، ڈاکٹرز اس کی آنکھیں بچانے کے لئے ہر ممکن کوششیں کررہے ہیں ، ہم پرامید ہیں۔خواتین کے لئے دہلی کمیشن کی سربراہ سواتھی مالیوال نے حملے کو انتہائی گھٹیا اور قابل نفرت قرار دیا ہے ، مالیوال نے ٹوئٹر پر کہا کہ میں ان درندوں کے خلاف سخت سزا کا مطالبہ کرتی ہوں ۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر