بیرون ملک سے آنیوالوں مسافروں کو ٹیسٹ نتائج سے قبل گھر بھیجنے کی وفاقی پالیسی کو خطرہ قرار دیدیا گیا

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)محکمہ صحت سندھ نے بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کو ٹیسٹ نتائج سے قبل ہی گھر جانے کی اجازت کی وفاقی پالیسی کو خطرہ قرار دے دیا۔نجی ٹی وی چینل جیو کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم کے معاون خصوصی برائے قومی سلامتی ڈاکٹر معید یوسف نے نئی پالیسی کا اعلان کیا تھا جس کے تحت بیرون ملک سے آنے والوں کے کورونا ٹیسٹ لے کر نتائج کا انتظار کیے بغیر انہیں فوری گھر بھیجنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ڈاکٹر معید یوسف کا کہنا تھا کہ مسافروں کو

ٹیسٹ کے نتائج کا انتظار کیے بغیر خود تنہائی کے لیے گھر بھیج دیا جائے گا، ٹیسٹ نتائج کو ٹریک اینڈ ٹریس سسٹم میں شامل کیا جائے گا۔اس سے پہلے مسافروں کو رزلٹ آنے تک 24 گھنٹوں کے لیے قرنطینہ کیا جاتا تھا اور رزلٹ منفی آنے پر گھر جانے کی اجازت تھی ورنہ 14 دن قرنطینہ میں رکھا جاتا تھا۔وفاقی حکو مت کے اس فیصلے پر محکمہ صحت سندھ نے اعتراض کیا ہے اور محکمہ صحت کا کہنا ہے کہ کورونا ٹیسٹ کے نتائج سے پہلےمسافرکوگھر جانے دینا خطرناک ہوسکتا ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر