عمران خان کیخلاف پولیس مقدمہ درج

جنرل خبریں

ی گالہ,  تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے خلاف رات بنی گالہ جاتے ہوئے پولیس کی زیرحراست 15 کارکنوں کو چھڑ انے کے الزام میں مقدمہ درج کرلیا گیا، جس کے بعد دن چڑھنے پر پولیس کی بھاری نفری نے عمران خان کی رہائش گاہ کا گھیراؤ کر لیا پھر واپس چلی گئی۔ تحریک انصاف نے گرفتاریوں اور گھیراؤ کے خلاف عدالت جانے کا فیصلہ کرلیا۔ عمران خان رات دو بجے اپنے کنٹینر سے بنی گالہ روانہ ہوئے، راستے میں لیک ویو پارک کے قریب پولیس وین میں تحریک انصاف کے زیر حراست کارکنوں کو دیکھ کرعمران خان کا قافلہ رْک گیا ، عمران خان نے پولیس والوں کو ڈانٹ پلائی اور 15 سے زائد کارکنوں کو چھڑ ا کر بنی گالہ ساتھ لے گئے .

تحریک انصاف کے رہنما کا کہنا تھا کہ اسلام آباد پولیس کارکنوں کو خصوصا خواتین کو تشدد کا نشانہ بنا رہی ہے اور انہیں نامعلوم مقام اور ریسٹ ہاؤسز میں منتقل کررہی ہے۔ پولیس نے عمران خان کے خلاف زیر حراست کارکنوں کو چھڑانے کے الزام میں تھانہ بنی گالہ میں مقدمہ درج کر لیا، اْن کا کہنا تھا کہ دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر کارکنوں کی گرفتاریاں عمل میں لائی جارہی ہیں جس کے بعد بھاری نفری نے اْن کی رہائش کا گھیراؤ کرلیا۔ عمران خان کی اس یقین دہانی پر کہ چھڑوائے جانے والے کارکن اْن کے پاس نہیں ، پولیس کے اعلیٰ حکام نے انہیں آگاہ کر دیا کہ آئندہ ایسا واقعہ ہوا تو انہیں ذمہ دار ٹھہرایا جائے گا،جس کے بعد پولیس کی نفری بنی گالہ سے واپس چلی گئی، تحریک انصاف کے ترجمان نعیم الحق نے نجی ٹی وی سے گفتگو میں کہا کہ گرفتاریوں کو ہائی کورٹ میں چیلنج کیا جائے گا۔ کارکنوں کو حراست میں لینا اور بنی گالہ میں رہائش گاہ کا محاصرہ غیر قانونی ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر