مولانا فضل الرحمن کے پیچھے اسرائیل اور بھارت پی ڈی ایم سے متعلق تہلکہ خیز دعویٰ سامنے آگیا

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)نجی ٹی وی پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے تجزیہ کار ظفر ہلالی نے دعویٰ کیا ہے کہ پی ٹی آئی حکومت گرانے کیلئے مولانا فضل الرحمن کی مالی مدد اسرائیل اور بھارت کر رہے ہیں، پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ موجودہ

حکومت کے خلاف ایک سازش شروع ہوچکی ہے نہ صرف حکومت بلکہ کچھ حد تک اسٹیبلشمنٹ اور سی پیک کے خلاف بھی سازشیں ہو رہی ہیں، علاقائی محاذ پر مولانا فضل الرحمن کو ٹاسک دیا گیا ہے جو 30 سے 40 ہزار طالب علم نکال سکتے ہیں یہ ان کی سٹریٹ پاور ہے جس کو وہ استعمال کرنا چاہتے ہیں اسی لیے ان کو پی ڈی ایم کا سربراہ بھی بنا دیاگیا ہے ، ایک بین الاقوامی محاذ بھی ہے جس سے ان کو سپورٹ مل رہی ہے، اس میں ہمارے روایتی دشمن بھارت ، اسرائیل ، امریکا تو ہی ہیں لیکن ایک ایسا ملک جو ہمارا دوست ہواکرتا تھا اب خفا ہے وہ بھی اس میں شامل ہے ، ان کو فنڈنگ وہاں سے آئے گی۔تجزیہ کار ظفر ہلالی نے انکشاف کیا کہ ان ممالک کا مقصد یہ ہے کہ مظاہرے اور تحریک کے ذریعے ایک قومی حکومت وجود میں آئے ، اس گورنمنٹ کا بھی حصہ ہوگا اگلی حکومت میں، لیکن عمران خان صاحب کا نام و نشان نہیں ہوگا ، یہ ان کا کھیل ہے اب دیکھنا ہے کہ یہ جماعتیں اپنی لیڈرشپ کو سپورٹ کریں گی اور عوام کو بھی سوچنا پڑے گا کہ کیا وہ اس سازش میں ملوث ہونا چاہتے ہیں ۔یا درہے کہ گزشتہ روز ہی مولانا فضل الرحمن کو پی ڈی ایم کا سربراہ بنایا گیا تھا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر