لاہور سیالکوٹ موٹر وے کیس کے مرکزی ملزم عابد علی ملہی کو کیسے گرفتار کیاگیا، حیران کن انکشاف

سوشل میڈیا‎‎

فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور کے نواحی علاقے گجر پورہ کے قریب موٹروے پر خاتون سے برا سلوک کرنے والے مرکزی ملزم عابد ملہی کو فیصل آباد سے گرفتار کر لیا گیا۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی شہباز گل نے تصدیق کر دی۔ایک نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق فیاض الحسن چوہان نے بھی اس بات کی تصدیق کر دی ہے، یاد رہے کہ 9 ستمبر کو منگل اور

بدھ کی درمیانی شب لاہور کے مضافات میں ملزمان فرانسیسی شہریت رکھنے والی خاتون کی عزت لوٹنے کے بعد ان کا اے ٹی ایم کارڈ لے گئے تھے۔یہ افسوسناک واقعہ اس وقت پیش آیا جب خاتون لاہور سیالکوٹ موٹر وے پر اپنے بچوں کے ساتھ گاڑی میں موجود تھی اور اس کی گاڑی کا فیول ختم ہو گیا تھا، اسی دوران 2 مسلح افراد وہاں آئے اور مبینہ طور پر خاتون اور ان کے بچوں کو مارا، جس کے بعد وہ انہیں قریبی کھیتوں میں لے گئے جہاں خاتون کے ساتھ برا سلوک کیا گیا۔حکومت نے بھرپور کوششیں کی اور بالاخر گرفتار کرنے میں کامیاب ہو گئی، نجی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق تفتیش کاروں نے ان 2 مشتبہ افراد کے تعاقب میں اپنی مہارت کا استعمال کیا جو شاید اپنی انگلیوں کے نشان اور ڈی این اے اس وقت پیچھے چھوڑ گئے جب انہوں نے متاثرہ خاتون اور بچوں کو زبردستی کار سے نکالنے کے لیے کار کی کھڑکی توڑی۔یاد رہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار اور آئی جی پنجاب انعام غنی نے پریس کانفرنس کے دوران بتایا تھا کہ ملزم کی شناخت کر لی گئی ہے۔ ملزم شیخوپورہ اور ننکانہ صاحب سمیت دیگر جگہوں پر فرار ہو گیا تھا۔اب مرکزی ملزم عابد ملہی کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ جسے لاہور منتقل کیا جا رہا ہے، کیس کا دوسرا ملزم شفقت پہلے ہی جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں موجود ہے۔ سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی

ڈاکٹر شہباز گل نے اپنے ٹویٹ میں لکھا کہ عابد ملہی کو گرفتار کر لیا گیا ہے، انشاء اللہ قانون کے مطابق سزا ملے گی۔ معاون خصوصی نے نجی ٹی وی سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ تمام معلومات پولیس شیئر کرے گی، ملزم کو فیصل آباد سے گرفتار کیا گیا ہے، وزیراعلیٰ پنجاب کیس کو خود مانیٹر

کر رہے تھے، آئی جی، سی سی پی او لاہور، پولیس دن رات کام کر رہے تھی۔معاون خصوصی نے کہا کہ ملزم کو عدالت میں پیش کیا جائے گا۔فیاض الحسن چوہان نے بھی گرفتاری کی تصدیق کر دی ہے۔بتایا گیا ہے کہ پولیس خفیہ اداروں کی مدد سے مرکزی ملزم کو گرفتار کرنے میں کامیاب ہوئی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر