ناصر جمشید کو برطانیہ سے ڈی پورٹ کئے جانے کا امکان رہائی ملتے ہی ناصر جمشید کو برطانیہ سے بے دخل کردیا جائے گا

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک )سابق پاکستانی کرکٹر ناصر جمشید کو پاکستان ڈی پورٹ کیے جانے کا امکان ہے۔ ان کی رہائی 21 اکتوبر کو ہورہی ہے۔نجی ٹی وی کے مطابق انگلینڈ کی جیل میں قید  اسپاٹ فکسنگ میں ملوث ناصر جمشید کو مانچسٹر کی کراؤن کورٹ نے 17 ماہ قید کی

سزا سنائی تھی۔اس وقت ناصر جمشید انگلیںڈ کی جیل میں ہیں اور 21 اکتوبر کو رہا ہونگے۔رہائی کے بعد انھیں پاکستان ڈی پورٹ کیا جاسکتا ہے۔پاکستان کرکٹ بورڈ کے اینٹی کرپشن ٹریبونل نے ناصر جمشید پر10 سال کی پابندی لگائی تھی۔دبئی میں 9 فروری 2017 کو اسلام آباد یونائیٹڈ اور پشاورزلمی کا میچ ہوا اور شرجیل خان کریز پر پہلے سے طے شدہ اشارہ دیتے ہوئے پہنچے۔ کرکٹر نے دوسرے اوور کی پہلی 2 گیندوں پر رن نہیں بنایا اور تیسری گیند پرصفر پر ایل بی ڈبلیو آؤٹ ہوکر پویلین لوٹ گئے۔ناصر جمشید کو 13 فروری 2017 کو ان کے گھر، انور کو دبئی سے واپسی پر ہیتھرو ائرپورٹ جبکہ اعجاز کو شیفیلڈ میں واقع ان کے گھرسے گرفتارکیا گیا۔واضح رہے کہ پی سی بی نے ٹریبونل سماعتوں کے بعد ناصرجمشید، خالد لطیف، شرجیل خان اور محمد عرفان کو معطل کر دیا تھا۔ ناصرجمشيد پر10 دس سال کی پابندی عائدکی گئی تھی۔برطانوی نشریاتی ادارے میں شائع رپورٹ کے مطابق سینیئرتفتیشی افسر آئن میک کونل کا کہناتھا کہ ان افراد نے پیشہ وارانہ اورانٹرنیشنل کرکٹ تک رسائی کا غلط استعمال کیا اور مالی فائدے کے لیے عوام کے اعتماد کو دھچکا پہنچایا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر