3 کلومیٹر میں 4 ڈرائیور تبدیل، کیپٹن صفدر کو مریم کی گاڑی کی ڈرائیونگ کیوں چھوڑنا پڑی؟

سوشل میڈیا‎‎

لاہور(این این آئی) جاتی امراء سے روانگی کے بعد تین کلو میٹر کے فاصلے کے دوران پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کی گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ پر چار تبدیلیاں ہوئیں۔ مریم نواز کی جاتی امراء سے روانگی کے وقت ان کے شوہر کیپٹن (ر) محمد صفدر نے ڈرائیونگ

سیٹ سنبھالی۔ کچھ دور جا کر رش بڑھنے پر مریم نواز کی مشاورت سے کیپٹن (ر) صفدر گاڑی سے نیچے اتر گئے اور راستہ کلیئر کرانے کے لئے آگے چلے گئے جبکہ ڈرائیونگ سیٹ ان کے ترجمان محمد زبیر نے سنبھال لی۔ تھوڑے فاصلے کے بعد محمد زبیر کی جگہ شریف خاندان کے ذاتی ڈرائیور نے یہ ذمہ داری سنبھالی لیکن اڈا پلاٹ پہنچ کر کیپٹن (ر) محمد صفدر نے دوبارہ آکر گاڑی کی ڈرائیونگ سیٹ سنبھال لی۔ اس حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے کیپٹن (ر) صفدر نے کہا کہ گاڑی چلانا نہیں بلکہ گاڑی کو پنڈال تک پہنچانا زیادہ اہم ہے۔ جتنا رش ہے ایسا لگتا ہے کہ صبح کی نماز داتا صاحب ہی پڑھیں گے۔ میری تو خواہش ہے کہ مجھے ہیلی کاپٹر مل جائے اور میں ”چیئر پرسن“ مریم نواز کو اڑا کر گوجرانوالہ پہنچا دو۔ انہوں نے کہا کہ عمران صاحب ”تواڈا وقت پورا ہو گیا“، انا للہ و انا علیہ راجعون۔دوسری جانب پاکستان مسلم لیگ (ن) کی نائب صدر مریم نواز کی جاتی امراء رائے ونڈ سے روانگی سے قبل خصوصی دعا کرائی گئی۔ مریم نواز نے دیگر کے ہمراہ اپنی والدہ بیگم کلثوم نواز، اپنے دادا میاں محمد شریف اور چچا عباس شریف کی قبروں پرفاتحہ خوانی بھی کی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر