پاکستانی مصنوعات پر ڈیوٹی بڑھانے کے بھارتی اقدام کے رد عمل میں جذباتی فیصلہ نہیں کرینگے : عبدالرزاق داؤد

بزنس

لاہور(این این آئی) وزیر اعظم کے مشیر برائے تجارت عبد الرزاق داؤد نے کہا ہے کہ پاکستانی مصنوعات پر 200فیصد ڈیوٹی عائد کرنے کے رد عمل میں بھارتی حکومت کے طرز پر جواب نہیں دیں گے،بھارت سے مشینری اور خام مال آتا ہے اور ہم موجودہ حالات میںاپنی معیشت کو نقصان نہیں پہنچا سکتے ،آئی ایم ایف سے مذاکرات کبھی بھی آسان نہیں ہوتے اور اس بار بھی ایسا ہی ہوگا ۔ ایک انٹر ویو میں عبد الرزا ق داؤد نے کہا کہ بھارت نے پاکستانی مصنوعات پر ڈیوٹی بڑھانے کا جو اقدام اٹھایا ہے اس کے رد عمل میں

ہم کوئی جذباتی فیصلہ نہیں کریں گے اور اس کے جواب میں ڈیوٹی نہیں بڑھائی جائے گی ۔ ہماری بھارت سے 1.8بلین ڈالر کی امپورٹ ہے جس میں زیادہ تر مشینری اور خام مال ہے ، ہم اس طر ح کا کوئی اقدام کر کے اپنی معیشت کو نقصان نہیں پہنچا سکتے ۔ انہوں نے کہا کہ معاشی صورتحال ٹھیک نہیں ہے او رحالات کافی برے ہیں ، یہ طے ہے کہ ہم نے آئی ایم ایف کے پاس جانا ہے اور آئی ایم ایف سے مذاکرات کبھی بھی آسان نہیں ہوتے اور اس بار بھی ایسا ہی ہوگا ۔ 22کروڑ کے ملک میں 17لاکھ ٹیکس پیئر زہیں ، انویسٹمنٹ ٹو جی ڈی پی اور سیونگ جی ڈی پی کی شرح سب کے سامنے ہے ۔ آئی ایم ایف کہے نہ کہے ہمیں اپنی معیشت کو پاؤں پر کھڑا کرنے کے لئے مشکل فیصلے کرنا پڑیں گے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر