پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں مندی،نفسیاتی حد گر گئی،سونا سستا،روپے کے مقابلے میں امریکی ڈالرمزید مہنگا ہوگیا

بزنس

کراچی (این این آئی)پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر مندی کا رجحان رہا،اور کے ایس ای100انڈیکس600پوائنٹس گھٹ گیا جس کی وجہ سے انڈیکس33ہزار پوائنٹس کی نفسیاتی حد سے کم ہو کر33ہزار پوائنٹس کی سطح پر آگیا،مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 131ارب روپے کی کمی بھی ریکارڈ کی گئی اور سرمائے کا مجموعی حجم67کھرب روپے سے کم ہو کر66کھرب روپے کی سطح پر آگیا۔ اسٹاک ماہرین کے مطابق سیاسی افق پر چھائی غیر یقینی صورتحال،

جے یو آئی کے دھرنے سے اضطراب پھیلنے، کیپٹل مارکیٹ میں آئندہ کی صورتحال کا دارومدار ایف اے ٹی ایف کے فیصلے پر منحصر ہونے اورایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کے فیصلے پر سرمایہ کاری کے بیشتر شعبوں نے حصص کی آف لوڈنگ کو ترجیح دی۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ گذشتہ ہفتے مندی کی لپیٹ میں رہی 4دن کی مندی سے انڈیکس 803.1پوائنٹس لوز کر گیا جبکہ ایک دن کی تیزی سے انڈیکس نے197.56پوائنتس ریکور کئے تاہم مجموعی طور پر مارکیٹ پر مندی کے اثرات غالب دیکھے گئے۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق گذشتہ ہفتے کے ایس ای100انڈیکس میں 605.54پوائنٹس کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے انڈیکس34475.69پوائنٹس سے کم ہو کر33870.15پوائنٹس ہو گیا اسی طرح408.75پوائنٹس کی کمی سے کے ایس ای30انڈیکس16237.38پوائنٹس سے گھٹ کر15828.63پوائنٹس ہو گیا جبکہ کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس24794.59پوائنٹس سے کم ہو کر24453.83پوائنٹس پر آگیا۔مندی کے سبب مارکیٹ کے سرمائے میں 1کھرب31ارب 90کروڑ6لاکھ64ہزار799روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس کے نتیجے میں سرمائے کا مجومعی حجم67کھرب71ارب 13کروڑ44لاکھ32ہزار982روپے سے کم ہو کر66کھرب 66کھرب39ارب23کروڑ 37لاکھ68ہزار183روپے رہ گیا۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے ٹریڈنگ کے دوران کے ایس ای100انڈیکس34697.92پوائنٹس کی بلند سطح کو چھو گیا تھا تاہم مندی کے سبب انڈیکس ایک موقع پر33666.41پوائنٹس کی کم سطح پر بھی ٹریڈ ہوتا دیکھا گیا۔پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں

گذشتہ ہفتے زیادہ سے زیادہ5اب روپے مالیت کے15کروڑ64لاکھ02ہزار حصص کے سودے ہوئے جبکہ کم سے کم 4ارب روپے مالیت کے 11کروڑ52لاکھ28ہزار حصص کے سودے ہوئے تھے۔ پاکستان اسٹاک مارکیٹ میں گذشتہ ہفتے مجموعی طور پر1857کمپنیو ں کا کاروبار ہوا جس میں سے774کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،964میں کمی اور119کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے ورلڈ کال ٹیلی کام،

ٹی آر جی پاک لمیٹڈ،لوٹے کیمیکل،یونٹی فوڈز لمیٹڈ،فوجی سیمنٹ،فوجی فرٹیلائزر بن قاسم،کے الیکٹرک لمیٹڈ،پاک انٹر نیشنل بلک،بینک آف پنجاب،اینگرو پولیمر،اٹک ریفائنری،دوست اسٹیل لمیٹڈ،حیسکول پیٹرول، ڈیسکون آکسچیم،عبداللہ شاہ،ایونسن لمیٹڈ،کوئس فوڈز،میپل لیف اور ڈی جی کے سیمنٹ سر فہرست رہے۔ہفتہ کو عالمی صرافہ مارکیٹ میں فی اونس سونا مہنگا ہو گیا تاہم لکی صرافہ مارکیٹوں میں سونے کی قیمت میں کمی کا رجحان رہا۔

آل پاکستان سپریم کونسل جیولرز ایسوسی ایشن کی رپورٹ کے مطابق ہفتہ کو عالمی صرافہ مارکیٹ میں فی اونس سونا2ڈالر مہنگا ہو کر1491ڈالر کا ہو گیا تاہم ملکی صرافہ مارکیٹوں ایک تولہ سونا100روپے سستا ہو کر86ہزار900روپے اور دس گرام سونا 85روپے سستا ہو کر75ہزار503روپے کا ہو گیا۔ کونسل کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق زیر تبصرہ مدت میں عالمی صرافہ مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت میں 5ڈالر کی کمی واقع ہوئی جبکہ ملکی صرافہ مارکیٹوں میں

ایک تولہ سونے کی قیمت میں 200روپے اور دس گرام سونے کی قیمت میں 829روپے کی کمی ریکارڈ کی گئی۔گذشتہ ایک ہفتے کے دوران انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر بڑھ گئی تاہم مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر مستحکم رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی ہفتہ وار رپورٹ کے مطابق گذشتہ ایک ہفتے میں انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں 10پیسے کا اضافہ ہوا جبکہ یورو اور برطانوی پونڈ کی قدر میں بالترتیب 2روپے اور3.80روپے کا نمایاں اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔فاریکس ایسو سی ایشن کے مطابق گذشتہ روزمقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قیمت خرید155.70روپے اور قیمت فروخت156.20روپے پر بدستور برقراررہی تاہم یورو کی قدر50پیسے بڑھ گئی جس سے یورو کی قیمت خرید 172.80روپے سے بڑھ کر173.30روپے اور قیمت فروخت174.80روپے سے بڑھ کر175.30روپے ہو گئی اسی طرح برطانوی پونڈ کی قدر میں 20پیسے کا اضافہ ہوا جس سے برطانوی پاونڈ کی قیمت خرید199.60روپے سے بڑھ کر199.80روپے اور قیمت فروخت201.60روپے سے بڑھ کر201.80روپے کی نئی بلند سطح پر جا پہنچی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر