غیرملکی سرمایہ کاروں نے کتنی بڑی رقم بیرون ممالک منتقل کر دی؟ اسٹیٹ بینک نے تفصیلات جاری کر دیں

بزنس

اسلام آباد(آن لائن) رواں مالی سال کی ابتدائی ششماہی کے دوران غیرملکی سرمایہ کاروں کی جانب سے پاکستان میں کی گئی سرمایہ کاری سے حاصل منافع جات کی بیرون ملک منتقلی میں 10 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ سٹیٹ بینک آف پاکستان (ایس بی پی) کے اعدادوشمار کے مطابق جاری مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2019ء کے دوران غیرملکی سرمایہ کاروں نے 836.3 ملین ڈالر کے منافع جات کی بیرون ملک منتقلی کی گئی ہے جبکہ گذشتہ مالی سال میں جولائی تا دسمبر 2018ء کے دوران پاکستان میں سرمایہ کاری کرنے والے غیرملکی سرمایہ کاروں نے 759.5 ملین ڈالر کے منافع

جات اپنے ممالک کو منتقل کئے تھے۔اس طرح گذشتہ مالی سال کے پہلے چھ ماہ کے مقابلہ میں رواں مالی سال کے اسی عرصہ کے دوران غیرملکی سرمایہ کاری سے حاصل منافع جات کی بیرون ملک منتقلی میں 76.8 ملین ڈالر یعنی 10 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا ہے۔ایس بی پی کی رپورٹ کےمطابق جاری مالی سال کی پہلی ششماہی کے دوران مینوفیکچرنگ سیکٹر سے سب سے زیادہ منافع جات کی منتقلی ہوئی ہے اور جولائی تا دسمبر 2019ء کے دوران 264 ملین ڈالر کی بیرون ملک منتقلی کی گئی ہے جبکہ تیل و گیس کی تلاش کے شعبہ سے 119 ملین ڈالر کے منافع جات منتقل کئے گئے ہیں۔ اسی طرح ٹرانسپورٹیشن کے شعبہ سے 157 ملین ڈالر جبکہ مالیات کے شعبہ سے حاصل ہونے والے 154 ملین ڈالر کے منافع جات کی بیرون ملک منتقلی کی گئی ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر