اگر پانی ٹھنڈا ہو کم سے کم30 ، گرم ہوتو کتنے سیکنڈز ہاتھ دھونے چاہئیں؟عالمی ماہرین کے کرونا وائرس کے پیش نظر مفید مشورے

صحت

لندن(این این آئی) ماہرین صحت نے گرم پانی اور صابن کے ساتھ ہاتھ منہ دھونے کی تجویز پیش کی ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق ماہرین نے ایک گفتگو میں کہاکہ اگر پانی گرم ہو کم سے کم 20 سکینڈز تک ہاتھ دھوئے جائیں اور اگر پانی ٹھنڈا ہو تو ہاتھ دوھونے کا دورانیہ 30 سکینڈ ہونا چاہیے۔ پیٹسبرگ چلڈرن ہاسپٹل میڈیکل سنٹرمیں شعبہ امراض اطفال اور متعدی امراض کے محکمہ کے سربراہ ڈاکٹر جان ولیم نے کہاکہ یہاں چار مختلف وائرل وائرس ہیں جو لوگوں کے درمیان مستقل طور پر ہر سال گردش کرتے ہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ وہ بنیادی طور پر

نزلہ زکام کا سبب بنتے ہیں۔ درحقیقت وہ عام نزلہ زکام ایک تہائی حصہ ہوتے ہیں۔ لیکن وہ موت کا سبب نہیں بنتے ہیں۔نہ صرف پانی اور صابن سے کرونا وائرس کا خاتمہ ہوتا ہے ، بلکہ یہ فلو جیسے دوسرے مضر وائرل وائرس کو بھی ہلاک کرتا ہے۔شیفنر نے وضاحت کی کہ الکحل کے محلول سے ہاتھوں کی صفائی وائرس سے نجات دہندگی میں صابن کی طرح موثر ثابت ہوسکتی ہے اگر صحیح استعمال کیا جائے۔ تاہم دیکھنا یہ چاہیے کہ ہاتھ دھوتے وقت پانی اور الکحل میں الکحل کی مقدار 60 فی صد سے کم نہ ہو۔شیفنر نے وضاحت کی کہ صرف ہاتھ کی ہتھیلی میں چھوٹے چھوٹے پوائنٹس ڈالنا اور جلدی سے مسح کرنا جراثیم اور وائرس کے خاتمے کے لئے کافی نہیں بلکہ ایک ایسی مقدار جو ہاتھ کی پوری ہتھیلی کو ڈھانپتی ہے اور ہر طرف اور انگلیوں کو ہر طرف اچھی طرح اپنی لپیٹ میں لیتی ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر