موت کا امکان زیادہ اور دل کی بیماریاں، عالمی ادارہ صحت نے کرونا کے علاج کیلئے ہائیڈروکسی کلوروکوئن کے تجربات معطل کر دئیے

صحت

نیو یارک(آن لائن)عالمی ادارہ صحت(ڈبلیو ایچ او) نے کورونا وائرس کے علاج کیلئے ہائیڈروکسی کلوروکوئن کے تجربات عارضی طور پر روک دیئے ہیں۔ماہرین کا کہنا ہے کہ اس سے موت کا امکان بڑھ جاتا ہے اور دل کی بماریاں لاحق ہونے کا بھی خدشہ ہے۔ عالمی ذرائع ابلاغ کی رپورٹ کے مطابق عالمی ادارہ صحت کی جانب سے جاری بیان میں کہاگیا ہے کہ اس بات کا کوئی ثبوت نہیں ہے کہ ہائیڈروکسی کلوروکوئن کورونا مریضوں کو فائدہ پہنچاتی ہے یا نہیں۔ جنیو امیں کی گئی ایک پریس کانفرنس کے دوران حکام نے بتایا کہ ہائیڈروکسی کلوروکوئن کی افادیت اور محفوظ

استعمال کے بارے میں شواہد اکٹھے کرنے کا سلسلہ جاری رہے گا تاہم کورونا وائرس کے علاج کیلئے اس کا استعمال ترک کردیا ہے۔ڈبلیو ایچ او کے سیفٹی مانیٹرنگ بورڈ کا ا?ئندہ اجلاس دو ہفتوں بعد ہوگا جس میں کوروناوائرس کیخلاف ائیڈروکسی کلوروکوئن کے استعمال سے متعلق فیصلے پرنظرثانی کی جائے گی۔بعدازاں تحقیق سے ثابت ہوا کہ ہائیڈروکسی کلورئن دوا، کورونا وائرس کے خلاف کارا?مد نہیں اور اس کے استعمال سے شرح اموات میں بھی اضافہ ہوا ہے۔چینی سائنسدانوں نے بھی بتایا تھا کہ ہائیڈروکسی کلوروکوئن کا کورونا وائرس کے مریضوں پر کوئی اثر نہیں ہوتا اور اس سے مریضوں کی صحت یابی کی رفتار پر کوئی فرق نہیں پڑتا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر