سعودی عرب یمن کو متحد، خوش حال اور مستحکم دیکھنا چاہتا ہے،عالمی ایلچی

انٹرنیشنل

صنعاء (این این آئی)یمن میں اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کے خصوصی ایلچی مارٹن گریفیتس نے گذشتہ روز ریاض میں سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان سے ملاقات کی ہے ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اقوام متحدہ کے مندوب نے سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع سےملاقات میں یمن میں سیاسی عمل میں ہونے والی پیش رفت، اسٹاک ہوم معاہدے پر عمل درآمد کرنے کی کوششوں اور دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا۔ اس موقع پر یو این ایلچی نے اقوام متحدہ اور ریڈ کراس کی بین الاقوامی کمیٹی کی قیدیوں کے تبادلے کی کوششوں کے

بارے میں بھی آگاہ کیا۔دونوں رہ نمائوں کے درمیان ہونے والی بات چیت میں یمن میں انسانی حقوق کی صورت حال، امن ومان کے قیام کے لیے درپیش چیلنجوں اور امن کے مواقع کو عملی جامہ پہنائے جانے کے لیے کی جانے والی کوششوں اور اس ضمن میں ہونے والی پیش رفت پر بات چیت کی گئی۔ اس موقع پر یو این ایلیچ مارٹن گریفیتھس نے متحارب فریقین پر زور دیا کہ وہ قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے کے لیے لچک کا مظاہرہ کریں۔اقوام متحدہ کے مندوب نے سعودی عرب کے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان کو الحدیدہ معاہدے کے نفاذ میں ہونے والی پیش رفت، بالخصوص جنگ بندی کی نگرانی کے طریقہ کار کو عملی شکل دینے اور شہریوں کے تحفظ اور انسانی عمل آگے بڑھانے کے لیے کی جانے والی مساعی پر بریفنگ دی۔خصوصی ایلچی نے نائب وزیر دفاع شہزادہ خالد بن سلمان سے جنوبی یمن حکومت اور عبوری کونسل کے درمیان ہونے والے کشیدگی اور اس کے حل کے لیے سعودی عرب کے کردار پر بات کی۔ ان کا کہنا تھا کہ سعودی عرب یمن کو متحد، خوش حال اور مستحکم دیکھنا چاہتا ہے۔ الریاض یمن کے حوالے سے اپنی ذمہ داریاں انجام دیتا رہے گا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر