حکومت ،اپوزیشن مذاکرات کے دوران ایسی تجویز سامنے آگئی جو کسی کے بھی وہم و گمان میں نہ تھی

اہم خبریں

اسلام آباد(اے این این ) حکومت اور اپوزیشن کے درمیان مذاکرات میں ٹرتھ اینڈ ری کنسیلی ایشن کمیشن کی طرز پر ڈائیلاگ فورم کی تشکیل کی تجویز بھی زیرغور ہے۔گزشتہ روز حکومتی کمیٹی اور اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کے درمیان ہونے والے مذاکرات میں ڈائیلاگ فورم کے قیام کی تجویز بھی زیرغور آئی ہے۔فورم کے قیام کی تجویز اکرم خان درانی، سابق وزیراعظم راجہ پرویز اشرف اور فرحت اللہ بابر کی طرف سے دی گئی۔ڈائیلاگ فورم میں سول ملٹری تنازعات مستقل بنیادوں پر حل کرنے کی بات بھی کی جائے گی جس میں سیاسی جماعتوں کے سربراہ اور تمام اسٹیک

ہولڈرز شریک ہوں گے۔حکومت اور اپوزیشن آزاد، خود مختار الیکشن کمیشن کے قیام اور انتخابی اصلاحات کیلئے نئی کمیٹی بنانے پر بھی متفق ہیں۔آزادی مارچ کا پرامن حل نکالنے کیلئے وزیراعظم عمران خان کی جانب سے قائم حکومتی کمیٹی اور اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کے درمیان وزیراعظم کے استعفے اور نئے انتخابات کے معاملے پر ڈیڈ لاک برقرار ہے۔ مذاکرات میں دونوں جانب سے سفارشات پیش کی گئی تاہم کوئی بڑی پیشرفت نہیں ہوسکی ہے اور وزیراعظم عمران خان کے استعفے سمیت مختلف معاملات پر ڈیڈ لاک برقرار ہے۔ حکومت اور اپوزیشن کی کمیٹیوں نے دوبارہ ملاقات پر اتفاق کیا ہے۔حکومتی کمیٹی اور اپوزیشن کی رہبر کمیٹی کے درمیان ہونے والے مذاکرات کی اندرونی کہانی سامنے آئی ہے جس کے مطابق حکومتی کمیٹی نے سفارشات رہبر کمیٹی کے سامنے رکھیں، سفارشات وزیراعظم عمران خان کی ہدایات کی روشنی میں رکھی گئیں۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر