مقبوضہ کشمیر پاکستان کے سرکاری نقشے میں شامل کرنے پربھارت تڑپ اٹھا، شدید ردعمل،پاکستان نے بھی کھری کھری سنا دیں

اہم خبریں

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان کی جانب سے گزشتہ روز مقبوضہ کشمیر کو سرکاری نقشے میں شامل کرنے کا بڑا فیصلہ سامنے آیا، اسی معاملے پر بھارت نے شدید رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس کی قانونی حیثیت ہے نہ عالمی ساکھ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی وزارت خارجہ نےاپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان کی جانب سے مقبوضہ کشمیر اور گجرات کے کچھ علاقوں کو نئے پاکستانی نقشے میں شامل کرنے کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے ، ان کے مطابق یہ ایک ’’نام نہاد‘‘ سیاسی نقشہ ہے ، اس کی قانونی حیثیت

ہے اور نہ ہی عالمی برادری میں اس کی کوئی ساکھ ہے۔دوسری جانب پاکستانی وزارت خارجہ نےپاکستان کی طرف سے جاری کیےگئے سیاسی نقشے پر بھارتی وزارت خارجہ کے بیان کو واضح طور پر مسترد کرتے ہوئےکہا ہے کہ بھارت زبردستی توسیع پسندی اور ریاستی دہشتگردی کے ساتھ ڈھٹائی کا مظاہرہ کرنے والا ملک ہے، بھارت ایسے بیانات سے مقبوضہ جموں و کشمیر میں اپنی غیر قانونی اور ناقابل قبول کارروائیوں سے توجہ نہیں ہٹاسکتا ، جس میں 5 اگست 2019 کے بعد کی گئی کارروائیاں بھی شامل ہیں۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر