تحریک انصاف کے اہم رہنما اور اہم عہدے پر فائز شخصیت کو نواز شریف سے ملاقات کی کوشش پر شدید شرمندگی کا سامنا کرنا پڑ گیا، نواز شریف کا دو ٹوک انکار

پاکستان

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق وزیراعظم میاں نواز شریف نے گورنر پنجاب چوہدری سرور سے ملنے سے انکار کر دیا، اس بات کا انکشاف معروف صحافی مرتضیٰ علی شاہ نے اپنے ایک ٹویٹ میں کیا انہوں نے کہا کہ گورنر پنجاب چوہدری سرور نے میاں نواز شریف سے سروسز ہسپتال میں ملاقات کی خواہش ظاہر لیکن سابق وزیراعظم نے ان سے ملنے سے انکار کر دیا۔ واضح رہے کہ میڈیکل بورڈ نے سابق وزیر اعظم محمد نواز شریف سے ملاقاتوں پر پابندی عائد کر دی،

صرف خاندان کے انتہائی قریبی افراد ملاقات کر سکیں گے۔ تفصیلات کے مطابق میڈیکل بورڈ نے سابق وزیراعظم محمد نواز شریف کی صحت کے پیش نظر ملاقات پر پابندی عائد کر دی ہے اور صرف خاندان کے انتہائی افراد ملاقات کر سکیں گے۔ سیاسی اور دیگر شخصیات کے لئے میڈیکل سپرنٹنڈنٹ کے دفتر کے سامنے کتاب رکھ دی گئی ہے اور عیاد ت کے لئے آنے والے افراد کتاب پر اپنے تاثر ات درج کر سکیں گے جن سے نواز شریف او ران کے خاندان کو آگاہ کیا جائے گا۔ جمعیت علمائے اسلام (ف) اور متحدہ قومی موومنت پاکستان کے وفود نے نواز شریف کی عیادت کے لئے سروسز ہسپتال کا دورہ کیا۔جے یو آئی کے وفد نے نواز شریف کی صحتیابی کے لئے دعا بھی کرائی۔ جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی ہدایت پر مولانا سلیم اللہ قادری اورمولانا لطف الرحمن کی قیادت میں وفد نے سروسز ہسپتال میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف سے ملاقات کر کے نواز شریف کی خیریت دریافت کی اور ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ اس موقع پر نواز شریف کی صحتیابی کے لئے دعا بھی کرائی گئی۔ علاوہ ازیں ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما فیصل سبزواری کی قیادت میں بھی وفد نے مسلم لیگ (ن) کے رہنماؤں سے ملاقات کر کے نواز شریف کی خیریت دریافت کی اور ان کی جلد صحتیابی کی دعا کرتے ہوئے نیک خواہشات کا اظہار کیا۔ایم کیو ایم کے رہنما فیصل سبز واری نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کا علاج انکی فیملی کی خواہش کے مطابق ہونا چاہیے۔سیاست میں مخالفت کو دشمنی تک نہیں لے جانا چاہیے۔ایم کیو ایم کے کارکنوں سے بھی نواز شریف کی صحتیابی کیلئے دعا ؤں کی اپیل کی ہے۔انہوں نے ایک سوال کے جواب میں فاروق ستار کے دل میں کیا راز ہے یہ ان کو ہی پتا ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر