ایف بی آر نے بینکوں سے کھاتے داروں کا ریکارڈ طلب کرلیا،پرائز بانڈ رکھنے والے بھی زد میں آگئے،کھلبلی مچ گئی

پاکستان

کراچی(این این آئی)چیئرمین فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر)سید شبر زیدی نے کہا ہے کہ بینک اکاؤنٹ ہولڈرز سے متعلقہ تمام معلومات کا تبادلہ کریں۔اس ضمن میں تمام بینکوں کو مراسلہ ارسال کردیاگیا ہے۔مراسلے میں کہا گیا ہے کہ بینکوں کی طرف سے مختلف اکاؤنٹ ہولڈرز کی طرف سے خریدے گئے بانڈز کی تفصیلات ابھی تک ایف بی آر کو فراہم نہیں کی گئیں۔چئیرمین ایف بی آر نے مراسلے میں تمام بینکوں کے سربراہان کو یاد دہانی کرائی ہے کہ بانڈ ہولڈرز کی تفصیلات فنانشل ایکشن ٹاسک فورس کی شرائط کے تحت بھی مطلوب ہیں۔ مزید یہ کہ

ایسے اکاؤنٹ ہولڈرز کی رقوم انکم ٹیکس گوشواروں میں بھی ظاہر نہیں ہو رہی۔مراسلے میں کہا گیاہے کہ بانڈ واشنگ کے تحت ٹیکس ادائیگی کو چھپایا جا رہا ہے اور ود ہولڈنگ ٹیکس ادا نہیں کیا جا رہا۔ کمپنیوں کی فنانشل اسٹیٹمنٹ اور ریکارڈ کے مطابق ایسی رقوم آف بیلنس شیٹ کے طور پر ظاہر ہوتی ہیں۔مراسلے میں کہا گیا ہے کہ لین دین کے نظام کو ریگولیٹ کرنے کے تحت تمام دولت اور ود ہولڈنگ کو قانون کے تحت ظاہر کرنا ضروری ہے۔ایف بی آر کے نئے احکامات کے بعد بینکوں میں اکاؤنٹس رکھنے والوں میں شدید تشویش کی لہر دوڑ گئی ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر