سمندر میں تیل و گیس کی تلاش،کیا واقعی وزیراعظم کو غلط اطلاع دی گئی؟کنوئیں سے کیا حاصل ہوا؟ترجمان نے نے وضاحت کردی

پاکستان

کراچی (این این آئی) پاکستان پیٹر ولئیم لمیٹڈ(پی پی ایل) کے ذرائع کے مطابق کیکڑاX-1 میں قدرتی گیس کے ذخائر کی موجودگی سے متعلق ایم ڈی و سی ای او معین رضاخان کے بیان کو سیاق و سباق سے ہٹا کر پیش کیا گیا۔دراصل، معین رضا خان نے قطعاً یہ نہیں کہا کہ اس معاملے کے بارے میں وزیر اعظم کو غلط اطلاع دی گئی تھی کیونکہ اس کنوئیں کو ای اینڈ پی صنعت کے معیار کے مطابق کامیابی کے مناسب امکانات کے ساتھ کھودا گیا تھا۔اگرچہ اس کنوئیں سے بہترین معیار کے

ذخیرے کی توقع تھی تاہم اس سے آبی ذخیرہ حاصل ہوا جس کی بناء پرہائیڈرو کاربن کی تلاش میں حوصلہ شکن نتائج کے باعث اسے ترک کر دیا گیا۔ معین رضا خان 28 اکتوبر کو پی پی ایل کے 68 ویں سالانہ اجلاسِ عام میں خطاب کر رہے تھے جس میں انہوں نے 2018-19 میں کمپنی کی ترقی و کامرانیوں کاذکر کیا اور گہرے پانیوں میں آف شور کنوئیں کیکٹراX-1 کی کھدائی کی اہمیت پر روشنی ڈالی۔کیکڑا X-1 کی کھدائی انڈس بلاک جی بلاک میں آپریٹر ای این آئی پاکستا ن لمیٹڈ اورایگزون موبائل، دونوں عالمی سطح پر تیل و گیس کی بڑ ی کمپنیوں نے ملک کی دو بڑی کمپنیوں پی پی ایل اور آئل اینڈ گیس ڈیویلپمنٹ کمپنی لمیٹڈکے ساتھ مل کرکی۔کیکڑا X-1 کی کھدائی سے 8 ٹی سی ایف گیس کے ذخائر کے حصول کی بڑی اُمید تھی۔اس حقیقت کے باوجود کہ کیکڑاX-1 ایک دشوار گزارگہرا آف شور کنواں تھا، اسے 12 فیصد ممکنہ کامیابی کی شرح کے ساتھ کامیابی سے کھودا گیا۔پی پی ایل اور او جی ڈی سی ایل دونوں نے پیداوار میں شراکت کے معاہدے اور ای اینڈ پی صنعت کے بہترین طریقہء کار کے تحت مشترکہ آپریٹنگ معاہدے کے مطابق کیکڑا X-1 کے لئے فعال کردار ادا کیا تھا۔اس ضمن میں، ملک کی دونوں کمپنیوں نے ادارہ جاتی اور قومی مفاد کو ترجیح دیتے ہوئے دیئے گئے طریقہء کاراور فیصلہ سازی پر عمل کیا۔ معین رضا خان نے کہا کہ کیکڑاX-1 سے حاصل ہونے والی اہم معلومات مستقبل میں کھدائی کے لئے مفید ثابت ہوں گی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر