آزادی مارچ کی سکیورٹی کے سلسلے میں تعینات پولیس اہلکار نے گلے پر بلیڈ پھیر لیا،وجہ کیا بنی؟سب کچھ سامنے آگیا

پاکستان

اسلام آباد(آن لائن)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے آزادی مارچ کی سکیورٹی کے سلسلے میں تعینات پولیس اہلکار نے پولیس لائن ہیڈ کوارٹر میں خودکشی کی کوشش کی۔اس حوالے سے ذرائع نے بتایا کہ سوات سے تعلق رکھنے والا اہلکار چھٹی لینا چاہتا تھا

اس کے لیے اعلیٰ افسران کو چھٹی کی درخواست بھی دی تھی۔تاہم افسران نے چھٹی کی درخواست پر اہلکار کی سرزنش کی جس پر اہلکار نے دلبرداشتہ ہو کر گلے پر بلیڈ پھیر کر خودکشی کرنے کی کوشش کی۔فرنٹیئر ریزرو پولیس اہلکار کی اس حرکت پر ڈسٹرکٹ انسپکٹر جنرل آپریشنز نے روایتی نوٹس لے کر ایس پی انڈسٹریلایریا کو معاملے کی تحقیقات کا حکم دے دیا۔پولیس حکام کے مطابق خودکشی کی کوشش کرنیکا اہلکار ہیڈکانسٹیبل صدیق خان ہے جس کا علاج اسلام آباد کے پمز ہسپتال میں جاری ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر