بتایا جائے کورونا مریضوں کیلئے جو وینٹی لیٹرز آئے تھے، وہ کہاں ہیں؟ ن لیگ نے حکومت کے سامنے سوالات رکھ دئیے

پاکستان

لاہور(این این آئی) مسلم لیگ (ن) کی ترجمان مریم اورنگزیب نے اسلام آباد میں کورونا مریضوں کیلئے عدم سہولیات پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ بتایا جائے کہ کورونا مریضوں کے لئے جو وینٹی لیٹرز آئے تھے، وہ کہاں ہیں؟۔ مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ اسلام آباد میں کورونا مریضوں کی تعداد 2400 سے زائد ہوچکی ہے اور صرف 12 وینٹی لیٹرز کام کر رہے ہیں، پمز ہسپتال میں 80 بستر کے آئیسولیشن وارڈ میں دیگر آئی سی یوز سے 9 وینٹی لیٹرز منتقل کئے گئے، پمز کے سرجیکل آئی سی یو کے 4، میڈیکل آئی سی یو کے

2 اور کارڈیالوجی سرجری آئی سی یو کے 3 وینٹی لیٹرز کورونا وارڈ میں منتقل کئے گئے، اسلام آباد کے دوسرے بڑے ہسپتال پولی کلینک میں صرف 4 وینٹی لیٹرز ہیں۔مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ پولی کلینک میں کورونا مریضوں کے لئے صرف 10 بستروں کا آئیسولیشن وارڈ قائم ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد کے سرکاری ہسپتالوں میں کل 90 بستر کے کورونا آئیسولیشن وارڈ کے سوا اور کوئی انتظام نہیں، لواحقین اپنے کورونا مریضوں کی جان بچانے کے لئے وینٹی لیٹرز کے حصول کی خاطر سفارشیں اور منتیں کرنے پر مجبور ہیں، حکومت جھوٹ پر جھوٹ بول کر قوم کی زندگیوں سے کھیل رہی ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر