کرونا کی وجہ سے گھر کے سربراہ کی حالت خراب،اہلخانہ کمرے میں بندکر کے فرار،پروفیسر ظہیر کی نعش 6 گھنٹے تک گھر میں پڑی رہی

پاکستان

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) کورونا مریض کی حالت بگڑنے پر اہلخانہ گھر کو تالا لگا کر فرار۔میڈیا رپورٹس کے مطابق کورونا کے خوف نے خونی رشتوں کا خون بھی سفید کر دیا۔

لاہور کے نواحی علاقے فیروزوالا میں مقامی کالج کے پروفیسر ظہیر احمد کورونا وائرس کی وجہ سے انتقال کرگئے۔اہل خانہ نے کورونا ثابت ہونے پر انہیں ایک کمرے میں بند کر دیا تھا۔ حالت بگڑنے پر اہل خانہ گھر کو تالے لگا کر فرار ہوگئے۔پروفیسر ظہیر کی لاش چھ گھنٹے تک بند گھر میں پڑی رہی۔پولیس نے موقع پر پہنچ کر کر لاش تحویل میں لے لی اور ایس او پیزپر عملدرآمد کرتے ہوئے تدفین کردی۔پروفیسر ظہیر کی حالت کا سن کر اہل محلہ بھی علاقہ چھوڑ گئے۔پروفیسرظہیر کا ایک بیٹا بھی گزشتہ رات کورونا وائرس کی وجہ سے انتقال کر گیا تھا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر