اوپن یونیورسٹی نے ہوم اسائنمنٹس جمع کرانے کا نیا طریقہ متعارف کردیا

پاکستان

اسلام آباد(این این آئی) علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی نے ڈیجیٹل ٹرانسفارمیشن کے عمل کو آگے بڑھاتے ہوئے مشقیں(Course assignments) جمع کرانے کا طریقہ کار مینول سے آٹومیشن پر منتقل کرنے کا آغاز کردیا ہے ٗ سمسٹربہار2020ء میں پیش کئے گئے بی ایڈ ٗ بی ایس ٗ پی جی ڈی ٗ ایم ایڈ ٗ ایم اے ٗ ایم ایس سی ٗ ایم فل اور پی ایچ ڈی پروگرامز میں رجسٹرڈ طلبہ اب یونیورسٹی کی ویب سائٹ www.aaghi.aiou.edu.pkپرلاگ اِن ہوکر اپنی مشقیں آن لائن جمع کرائیں گے۔ اِن پروگرامز کی پہلی مشق جمع کرانے کی تاریخ 15۔اگست جبکہ دوسری مشق جمع کرانے کی

آخری تاریخ 15۔اکتوبر مقرر کی گئی ہے۔ڈائریکٹر انفارمیشن اینڈ کمیونیکیشن ٹیکنالوجی ٗ محمد اجمل فاروق کے مطابق سمسٹربہار2020ء میں داخل طلبہ و طالبات کو Usernames اوs Password بذریعہ ایس ایم ایس بھیج دئیے گئے ہیں۔طلبہ کو ہدایت کی گئی ہے کہ یوزر نام اور پاس ورڈ ویسے درج کریں جیسے انہیں میسج میں ملے ہیں ٗ یعنی جہاں لفظ کیپٹل ہے ٗ کیپٹل ہی درج کریں۔لاگ اِن ہونے کے بعد Student Quick Manualپر کلک کرکے پی ڈی ایف فائل ڈائون لوڈ کرلیں جس میں مشقیں جمع کرانے کا طریقہ ترتیب واردرج ہے۔ایسے طلبہ جن کو ابھی تک یونیورسٹی کی طرف سے میسج موصول نہ ہوا ہو یا انہوں نے میسج ڈیلیٹ کردیا ہے ٗ وہ [email protected]پر اپنے کوائف دوبارہ ارسال کریں۔طلبہ اپنی دونوں مشقیں یکجا بھی آخری مقررہ تاریخ) 15۔اکتوبر2020ء (تک آن لائن جمع کراسکتے ہیں ٗ اس کے بعد مشقیں اپ لوڈ کرنے کا لنک ہٹادیا جائے گا۔طلبہ مزید رہنمائی کے لئے براہ راست ای میل [email protected]پر بھی رابطہ کرسکتے ہیں۔دریں اثناء ڈائریکٹر ریجنل سروسسز ٗ انعام اﷲ شیخ نے طلباء کو ہدایت کی ہے کہ تدریسی مشقوں کے کام میں کسی دوسرے طالب علم یا گروہ سے مدد حاصل نہ کریں ۔انہوں نے متنبیہ کیا ہے کہ مشقوں کی Plagiarismچیکنگ کی جائیگی اور اگر کسی دو یا دو سے زیادہ طلباء کی مشقیں ایک جیسی پائی گئیں یا یہ معلوم ہوا کہ کسی طالب علم نے نقل کرکے مشق حل کی ہے تو ایسے طلباء کے خلاف انضباطی کاروائی کی جائیگی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر