ڈکیت اور ریاست مخالف عناصر اسلام آباد میں کھلے عام پھر رہے ہیں ہائیکورٹ نے الیکٹریکل انجینئر سلمان فاروق اغواکیس کا تحریری فیصلہ جاری کردیا

پاکستان

اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد ہائیکورٹ نے کہا ہے کہ ڈکیت اور ریاست مخالف عناصر دارالحکومت میں کھلے پھر رہے ہیں ،اربوں روپے سے لگے سیف سٹی کیمروں سے بھی کوئی مدد نہیں مل رہی ۔ ہائی کورٹ نے تحریری فیصلے میں کہا کہ ستائیس سالہ الیکٹریکل انجینئر سلمان فاروق اکتوبر 2019 سے اغوا ہے، سلمان فاروق کے والد نے بیٹے کی بازیابی کے لئے ہائیکورٹ سے رجوع کررکھا ہے،ڈکیت اور ریاست مخالف عناصر دارالحکومت میں کھلے پھر رہے ہیں۔ فیصلے میں کہاگیاکہ اغوا ہونے والے کی کسی ریاست مخالف سرگرمی کی بھی کوئی رپورٹ پیش نہیں کی گئی، وزارت

دفاع کے ماتحت اداروں نے کنفرم کیا کہ مغوی ان کے پاس نہیں، وزارت داخلہ سے بھی معلومات مانگی گئیں لیکن کوئی فائدہ نہیں ہوا ، اربوں روپے سے لگے سیف سٹی کیمروں سے بھی کوئی مدد نہیں مل رہی ۔تحریری حکمنامہ کے مطابق پولیس مشتبہ گاڑیوں کا سراغ لگانے میں بھی ناکام رہی ، جے آئی ٹی نے معاملے پر سربمہر رپورٹ جمع کرائی۔ فیصلے میں کہاگیاکہ جے آئی ٹی رپورٹ کے مطابق مغوی کو قانون نافذ کرنے والے اداروں نے اٹھایا اور وہ اسے پیش کرنے کو تیار نہیں،کسی بھی ادارے نے مغوی کو بازیاب کروا کر پیش نہیں کیا ،ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کے علاوہ اب اور کوئی راستہ نہیں ۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر