ننھی ارمش کو قتل کرنے والی ماں نے اعترافی بیان ریکارڈ کرا دیا،سگی ماں اپنی ہی معصوم بیٹی کی قاتل کیسے بنی؟ انتہائی افسوسناک انکشافات

سوشل میڈیا‎‎

حیدر آباد(این این آئی)ننھی ارمش کو قتل کرنے والی ماں نے شگفتہ ناز اپنا اعترافی بیان ریکارڈ کرا دیا ہے جس میں اپنی بیٹی کی زندگی لینے کا اقرار کیا گیا ہے۔حیدرآباد پولیس کے ہاتھوں گرفتار ملزمہ شگفتہ ناز کو بی سیکشن پولیس نے فرسٹ سول جج کی عدالت میں اتوار کے روز پیش کیا۔پولیس ذرائع کے مطابق ملزمہ نے اپنے جرم کا اعتراف کر لیا ہے۔

ملزمہ شگفتہ ناز نے دفعہ 164 سی آر پی سی کے تحت اعترافی بیان رکارڈ کرایا، عدالت نے ملزمہ کو تین روزہ ریمانڈ پرپولیس کے حوالے کردیا۔ملزمہ نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ گھریلو ناچاکی کے باعث اس نے یہ سنگین قدم اٹھایا۔ ملزمہ نے بتایاکہ اسے شوہر اور سسرال والوں کی جانب سے تشدد کا سامنا تھا، معمولی جھگڑوں پر بھی شوہر اسے طلاق اور دوسری شادی کی دھمکیاں دیتا رہتا تھا۔شگفتہ کے مطابق وہ ان روز روز کی جھڑپوں کی وجہ سے شدید ذہنی دباؤ کا شکار تھی، اسی وجہ سے خود کو اور بچی کو مارنے کا ارادہ کیا تھا۔ملزمہ نے اپنے بیان میں کہا کہ اس کے شوہر آفتاب نے ملزمہ کو طلاق دینے کا ارداہ بنا لیا تھا، معاملہ کو جانتے ہوئے وہ انتہائی ذہنی دباؤ میں آگئی تھی کہ طلاق کے بعد اگر شوہر نے بچی کو بھی اپنے پاس رکھ لیا تو وہ کیا کرے گی۔شگفتہ نے کہاکہ وہ کئی روز سے اس قتل کی منصوبہ بندی کر رہی تھی اس کا پلان تھا کہ وہ بچی کو قتل کر لینے کے بعد خود بھی خودکشی کر لے گی، ملزمہ نے قتل کی واردات کی معلومات دیتے ہوئے عدالت کو بتایا کہ اس نے ننھی ارمش کو قتل کرنے کے بعد اس کی نعش کو ایک بیگ میں ڈالا اور قریبی علاقے میں پھینک آئی تھی۔ملزمہ شگفتہ نازنے کہاکہ اس کا تعلق اچھے خاندان سے ہے مگر گھریلو ناچاکی اور اور سسرال والوں کے برے سلوک کے باعث وہ یہ سنگین قدم اٹھانے پر مجبور ہوئی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر