خواجہ برادران کی گرفتاری کے بعد اب کون کون جیل جانیوالا ہے؟ کونسی بڑی سیاسی شخصیات اور بیوروکریٹس کا نمبر لگ گیا، دھماکہ خیز انکشاف

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)خواجہ برادران کی گرفتاری کے بعد اب کن لوگوں کو گرفتار کیا جانیوالا ہے، بڑے بڑے سیاستدانوں اور بیوروکریٹس کی جلد گرفتاری متوقع، قومی اخبار کی رپورٹ میں سنسنی خیز انکشافات۔ تفصیلات کے مطابق قومی اخبار کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ خواجہ برادران کی گرفتاری کےبعداب ن لیگ کے حمزہ شہباز اور پیپلزپارٹی کے آصف زرداریاور فریال تالپور سمیت متعدد اہم سیاسی رہنما اور ٹاپ بیوروکریٹس کرپشن کیسز میں جلد گرفتار ہونیوالے ہیں۔

اخبار کی رپورٹ کے مطابق ملک کی بڑی سیاسی شخصیات اور ٹاپ بیوروکریٹس کو کرپشن کیسز میں جاری انکوائریوں میں جلد حراستمیں لے لیا جائے گا،مسلم لیگ (ن)، پیپلز پارٹی اور حکومتی جماعت کی اہم سیاسی رہنماوں کے خلاف کرپشن کی انکوائریاں چل رہی ہیں۔اعلیٰ حکومتی ذرائع نے کرپشن کے خلاف انکوائریاں کرنے والے وفاقی اداروں کے افسروں کا حوالہ دیتے ہوئے بتایا کہ کرپشن میں ملوث بڑی سیاسی شخصیات اور ٹاپ بیوروکریٹس پر جلد ہاتھ ڈالا جائے گا کیونکہ کئی انکوائریاں جلد مکمل ہونے جا رہی جسکے بعد متعلقہ اداروں کے پاس انکو حراست میں لیکر تفتیش کرنے کا خاطر خواہ مواد اکٹھا ہو جائے گا،انکے مطابق مسلم لیگ (ن)کے پنجاب اسمبلی میں اپوزیشن لیڈر حمزہ شہباز کو دوحہ کی فلائٹ سے اسی لئے آف لوڈ کیا گیا تاکہ وہ اپنے خلاف جاری انکوائری میں حراست سے بچنے کے لئے ملک سے باہر جا کر نہ بیٹھ جائیں ِ،پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین صدر آصف علی زرداری اور انکی بہن فریال تالپور کے خلاف جاری انکوائریوں میں انکو حراست میں لیا جا سکتا ہے ،مسلم لیگ (ن)اور پیپلز پارٹی کے رہنماؤں کے خلاف انکے قریبی اپنی قیادت کے خلاف سلطانی گواہ بننے کے لئے بھی تیار ہیں لیکن تحقیقاتی ادارے ٹھوس شواہد اکٹھے کر رہے ہیںتا کہ کرپٹ سیاسی لیڈرز پر مضبوط ہاتھ ڈالا جا سکے اور وہ نیب عدالت سے کمزور ثبوتوں کی بنا بر بچ نہ جائیں،انکا یہ بھی کہنا تھا کہ حکومتی جماعت کے بھی چند رہنماؤں جن میں وزرا بھی شامل ہیں کے خلاف انکوائریاں جاری ہیں اور ان میں سے کسی کو حراست میں لیا جا سکتا ہے ،بارہ ٹاپ بیوروکریٹس جن میں پانچ سینئر پولیس افسر شامل ہیں کے خلاف جاری انکوائریوںکے بھی جلد مکمل ہونے کا امکان ہے جسکے بعد انکو حراست میں لیا جانے کا مواد اکٹھا ہو جائے گا،اس نمائندے کے ٹاپ بیوروکریٹس کے نام افشا کرنے کے اصرار پر انہوں نے کہا کہ انکے نام اس سٹیج پر منظر عام پر لانے سے وہ کئی ثبوت مٹانے کی کوشش کریں گے ،

انکا کہنا تھا کہ بڑی سیاسی شخصیات اور ٹاپ بیوروکریٹ کے اثاثوں کی تفصیلات اکٹھا کرنے کے حوالے سے وفاقی تحقیقاتیاداروں کو ملک کی اعلی انٹیلی جنس ایجنسیوں کی مدد بھی حاصل ہے جبکہ مفرور ملزمان کو گرفتار کرنے میں بھی وہ معاونت فراہم کر رہے ہیں ،پیراگون کرپشن سیکنڈل کے اہم کردار قیصر امین بٹ کو سندھ سے گرفتار کرنے میں ایک پریمئر انٹیلی جنس ایجنسی نے تحقیقاتی ایجنسی کی مدد کی،اعلیٰ حکومتی ذرائع نے بتایا کہ صوبائی سطح پر کرپشن کے خلاف آپریشنز تیز تر

کرنے کے لئے بھیوزیر اعظم نے صوبائی انسداد کرپشن محکمے کو وزراء اعلی کے ذریعے خصوصی ہدایات جاری کی ہوئی ہیں اور وہ انسداد کرپشن مہم کی رپورٹس براہ راست منگواتے ہیں جبکہ وزراء اعلیٰ انکو ٹیلیفونک رابطے کے ذریعے بریف بھی کرتے ہیں،انکا کہنا تھا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت پنجاب اور خیبر پختوانخواہ میں ہے لہذا صوبائی سطح پر ان دو صوبوں سے وزیر اعظم رزلٹ مانگ سکتے ہیں ،انکا کہنا تھا کہ کرپشن مہم کا اہم ہدف پنجاب ہے ،جبکہ وفاق کی سطح پر کرپشن کے خلاف کام کرنے والے تحقیقاتی ادارے سندھ اور بلوچستان کو بھی خصوصی فوکس کئے ہوئے ہیں۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر