یوم پاکستان،18 سے 30 مارچ تک بڑی پابندی عائد

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد(آن لائن) اسلام آباد انتظامیہ نے 23مارچ کو یومِ پاکستان کے سلسلے میں تمام انتظامات مکمل کر لیے۔ انتظامیہ نے 23مارچ کے دن کی تمام تقریبات کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی۔ حکام نے یومِ پاکستان کے روز شہر میں مختلف سرگرمیوں پر پابندی عائد کر دی، 23مارچ کی آمد سے پہلے شہر میں موجود تمام گیسٹ ہاؤسز کی سیکیورٹی چیکنگ کی جائے گی۔ڈپٹی کمشنر اسلام آباد کی

جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں تیرہ سے زیادہ مختلف سرگرمیوں پر پابندی عائد کی گئی ہے۔23مارچ کو یومِ پاکستان کے سلسلے میں ضلعی انتظامیہ اور وفاقی پولیس نے تمام تقریبات کے انتظامات کو حتمی شکل دے د ی ہے۔ 18مارچ سے30مارچ تک پریڈ گراؤنڈ کے ارد گرد تمام شادی ہالز بند رہیں گے، اسی طرح پریڈ گراؤنڈ کے اطراف میں بس اڈے بھی بند رہیں گے۔شہر میں کبوتر بازی اور پتنگ بازی پر بھی مکمل پابندی رہے گی۔ حکام نے شہر میں ڈرون کیمروں کے استعمال پر بھی پابندی لگا دی ہے۔ نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ پریڈ گراؤنڈ کے ارد گرد کسی بھی قسم کے سٹالز لگانے پر بھی پابندی ہو گی۔ گراؤنڈ کے ارد گرد موجود بھینسوں کے باڑے بھی بند رہیں گے اور انہیں کسی اور جگہ منتقل کیا جائے گا۔ اطراف میں موجود جگہوں پر جہاں تعمیرات کا کام جاری ہے وہ بھی 18مارچ سے30مارچ تک بند رہے گا۔گردونواح میں موجود فیکٹریاں بھی اس دوران بند رہیں گی۔بدھ کے روز آئی ایس پی آر نے میڈیا کو بتایا کہ 23مارچ کے روز پاکستان افواج کی پریڈ کی تقریب میں ملائیشیا کے صدر مہاتیر محمد مہمانِ خصوصی ہوں گے۔ تقریب میں کئی غیر ملکی شخصیات شرکت کریں گی اس لیے اس تقریب کی سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات پر بہت کام کیا گیا ہے۔ شہریوں کے لیے ٹریفک پلان بھی جاری کر دیا گیا ہے اور پریڈ میں آنے والے شہریوں کے لیے پارکنگ بھی مخصوص کر دی گئی ہے۔ یومِ پاکستان کی تقریب میں وزیراعظم عمران خان اور تینوں افواج کے سربراہان شرکت کریں گے اور ملائیشیا کے صدر مہاتیر محمد مہمانِ خصوصی ہوں گے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر