بھارت میں مردہ گائے کی کھال اتارنے پر مشتعل افرادنے مسیحی نوجوان قتل کردیا

سوشل میڈیا‎‎

نئی دہلی(این این آئی )بھارت میں مردہ گائے کی کھال اتارنے پر مشتعل افراد نے ایک شہری کو قتل اور دیگر 3 کو زخمی کردیا۔بھارتی ٹی وی کے مطابق واقعہ بھارت کی مشرقی ریاست جھاڑکھنڈ میں پیش آیا جہاں مقامی مسیحی برادری کے افراد ایک بیل کی کھال اتار رہے تھے۔جھاڑکھنڈ پولیس کے سینئر حکام ایم ایل مینا کا کہنا تھا کہ مشتعل افراد کے ہاتھوں میں سریے اور ڈنڈے تھے جنہوں نے مسیحی برادی کے افراد پر حملہ کیا۔

ان کا کہنا تھا کہ اس حملے میں زخمی ہونے والے 3 افراد کو ہسپتال منتقل کردیا گیا جبکہ 2 ملزمان کو مبینہ قتل کے الزام میں گرفتار کیا جاچکا ہے اور مزید 5 کی گرفتاری کے لیے کوششیں کی جارہی ہیں۔انہوں نے بتایا کہ فی الوقت یہ کہنا مناسب نہیں ہوگا کہ ملزمان ہندو انتہا پسند گروہ کا حصہ تھے یا نہیں۔ان کے مطابق حملے کا نشانہ بننے والے 4 افراد مقامی قبیلے کے تھے اور ان کے خلاف بھی غیر قانونی طور پر بیل ذبح کرنے کا مقدمہ درج کیا جاچکا ہے۔مینا کا کہنا تھا کہ متاثرین کے خلاف مقدمہ گاؤں کے مقامی ہندو شخص کی شکایت پر درج کیا گیا جو اس کے مطابق بیل کو ذبح کرنے کے واقعے کا عینی شاہد ہے۔ان کا کہنا تھا کہ اب تک کی تحقیقات کے مطابق بیل طبعی موت مرا تھی تاہم ہم اس بارے میں مزید تحقیقات کر رہے ہیں۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر