مصباح الحق کی ویسٹ انڈیز کے خلاف تین وکٹیں لینے کے باوجود فاسٹ باؤلر محمد عامر پر تنقید

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد (این این آئی)قومی ٹیم کے سابق کپتان مصباح الحق نے ویسٹ انڈیز کے خلاف تین وکٹیں لینے کے باوجود فاسٹ باؤلر محمد عامر کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہاہے کہ مجھے عامر کی بائولنگ فارم کے حوالے سے پریشانی ہے ۔ایک انٹرویو میں انہوں نے کہا کہ یہ بات بظاہر مثبت نظر آتی ہے کہ محمد عامر نے ویسٹ انڈیز کے خلاف میچ میں تین وکٹیں حاصل کیں لیکن مجھے ان کی باؤلنگ فارم کے حوالے سے پریشانی ہے۔مصباح الحق نے کہا کہ پاکستانی ٹیم 105رنز پر ڈھیر ہو گئی تھی لیکن آپ کا سب سے اہم فاسٹ

باؤلر پہلا اوور کرنے کے لیے آتا ہے تو اس کی باؤلنگ کی اوسط رفتار 81 میل فی گھنٹہ تھی۔انہوں نے کہا کہ عامر کی باؤلنگ میں کوئی سوئنگ نہ تھی جبکہ وہ انتہائی مطمئن نظر آ رہے تھے اور ان کی باؤلنگ سے کہیں بھی ایسا نہیں لگ رہا تھا کہ ہم حریف ٹیم کو یہ پیغام دے رہے ہوں کہ ہم میدان میں لڑنے کے لیے آئے ہیں۔میچ میں حسن علی نے اپنے 4 اوورز میں 39رنز دئیے اور کوئی وکٹ بھی نہ لے سکے لیکن اس کے باوجود مصباح ان کی کوشش اور باؤلنگ کو سراہا۔مصباح نے کہا کہ عامر کے مقابلے میں اگر دوسرے باؤلر کو دیکھیں تو وہ جان مارتے نظر آئے مثلاً حسن علی نے 88 سے 89 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے گیند کی اور وہ کوشش کرتے ہوئے نظر آئے۔انہوں نے کہا کہ حسن علی نے رنز دئیے لیکن ان کے سامنے کرس گیل تھے جنہوں نے اپنے تجربے کی بنیاد پر انتہائی عقلمندی کا مظاہرہ کیا اور وہ جانتے کہ اس وکٹ پر باؤلرز کو زیادہ باؤنس ملے گا اور طویل القامت باؤلرز کو کھیلنا مشکل ہو گا اور یہی وجہ ہے کہ حسن علی نے اچھی باؤلنگ کی لیکن اس کے باوجود انہیں وہ باؤنس نہیں ملا جس کی وجہ سے کرس گیل نے ان کے خلاف رنز اسکور کیے۔ورلڈ کپ میں پاکستانی ٹیم اپنا دوسرا میچ میزبان انگلینڈ کے خلاف کھیلے گی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر