ایف بی آرکے ساتھ ڈیڈ لاک برقرار، آل پاکستان انجمن تاجران نے آزادکشمیر،گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں مکمل شٹر داؤن ہڑتال کا اعلان کردیا

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد (این این آئی) صدر آل پاکستان انجمن تاجران اجمل بلوچ نے کہا کہ ایف بی آرکے ساتھ ڈیڈ لاک برقرار ہے، 29 اور 30 اکتوبر کو آزادکشمیر،گلگت بلتستان سمیت ملک بھر میں مکمل شٹر داؤن ہڑتال ہوگی۔ جبکہ ایف بی آر کے ساتھ مذاکرات سے انکار نہیں کرتے۔تفصیلات کے مطابق پیر کے روز نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے

آل پاکستان انجمن تاجران کے صدر اجمل بلوچ نے کہا کہ ایف بی آر کے ساتھ اس سے پہلے بھی کئی مرتبہ مذاکرات ہوچکے ہیں،چیئرمین ایف بی آر کی جانب سے جواب ملتا ہے فکسڈ ٹیکس کا نظام لا رہے ہیں مگر دو گھنٹے بعد وہ اپنا بیانیہ بدل دیتے ہیں، انہوں نے کہا کہ اب انجمن تاجران کے رہنما تھک چکے ہیں، اس لئے ملک بھر میں 29 اور30 اکتوبر کو شٹر ڈاؤن ہڑتال ہوگی، اجمل بلوچ نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف کے ساتھ معاہدہ کرتے وقت ایف بی آر کو بتانا چاہیے تھا کہ اتنا پیچیدہ ٹیکس نظام ملک پاکستان میں نہیں چل سکتا، جبکہ آئی ایم ایف کی ٹیم کو بھی چاہیے کہ وہ تاجر رہنماؤں کے ساتھ مذاکرات کرے تاکہ تاجر برادری ان کو یہ بتا سکے کہ جو معاہدات وہ بیرون ممالک کے ساتھ کرتے ہیں وہ پاکستان میں ممکن نہیں ہے، پاکستان کے تاجر اتنے پڑھے لکھے نہیں ہیں آئی ایم کو چاہیے کہ معاہدہ میں تبدیلی کرے، انہوں نے یہ بھی کہا کہ پاکستانی تاجر اتنی کڑی شرائط پر عمل درآمد نہیں کرسکتا، ان سخت شرائط کی وجہ سے پاکستانی تاجروں کا کاروبار تباہ ہو کر رہ گیا ہے، اسکے علاوہ ایف بی آر میں کرپشن کی وجہ سے پاکستانی تاجر پہلے ہی خوف میں مبتلاۂے جبکہ موجودہ مشیر خزانہ اور چیئرمین ایف بی آر جب سے تعینات ہوئے ہیں مسائل میں مسلسل اضافہ ہوا ہے اور کاروبار کا پہیہ بری طرح سے رک کر رہ گیا ہے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر