بھارت کا 3500کلو میٹر تک مار کرنے والے بین الابراعظمی میزائل کاتجربہ،انتباہ جاری ،پاکستان کیلئے نئی مشکل کھڑی ہوگئی

سوشل میڈیا‎‎

نئی دلی(آن لائن) بھارت آئندہ جمعے کو 3500 کلومیٹر دور تک مار کرنے والے جوہری میزائل کا تجربہ کرے گا۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق جنگی جنون میں مبتلا بھارت اب آبدوز کے ساتھ حملہ کرنے کی صلاحیت بڑھانے پر تیزی سے کام کر رہا ہے اور اس حوالے سے پانی کے اندر آبدوز سے فائر کئے جانے والے دو میزائلوں میں سے ایک کے فور جوہری میزائل کا تجربہ کیا جائے گا۔

رپورٹ کے مطابق میزائل تجربہ آندھرا پردیش کے ساحل کے قریب پانی کے اندر موجود پلیٹ فارم کی مدد سے کیا جائے گا، اور اس حوالے سے انتباہی نوٹس یعنی نوٹم (نوٹس ٹو ایئرمین) اور سمندری انتباہ جاری کیا جاچکا ہے۔ کے فور میزائل 3500 کلومیٹر دور تک ہدف کو نشانہ بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے اور اس کے ساتھ ایٹمی وار ہیڈس بھی لے جا سکتا ہے۔ اس طرح اسے بین البراعظمی ایٹمی میزائل قرار دیا جاسکتا ہے۔دفاعی تجزیہ کاروں کا متوقع بھارتی میزائل تجربے کے بارے میں کہنا ہے کہ اب تک پاکستان بھارت کے ہر بڑے اقدام کا بھرپور جواب دیتارہا ہے بھارتی ایٹمی دھماکوں کے بعد پاکستان نے بھی جواب میں ایٹمی دھماکے کئے اسی طرح میزائل تجربوں اوردفاعی میدان میں دیگر اقدامات کے جواب میں بھی پاکستان بھرپور جواب دیتارہا، تاہم اس بار پاکستان مشکل میں نظر آرہا ہے سب جانتے ہیں کہ پاکستان کے پاس طویل فاصلے تک مار کرنے والے میزائلوں کی صلاحیت موجود ہے تاہم پاکستان نے اب تک اپنی صلاحیت کو صرف بھارت کو پیش نظر رکھتے ہوئے ہی ظاہر کیا ہے ۔ دیکھنا یہ ہے کہ پاکستان بھارتی میزائل تجربے کے جواب میں اپنی طاقت کا مظاہرہ کرتا ہے یا نہیں؟اگرپاکستان نے طویل فاصلے تک ما رکرنے والے میزائل کا جوابی تجربہ کیا تو امریکہ ،خاص طورپر اسرائیل کو پریشانی کا سامنا ہوگا۔ بھارت آئندہ جمعے کو 3500 کلومیٹر دور تک مار کرنے والے جوہری میزائل کا تجربہ کرے گا۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر