احتیاط نہ کی تو امریکہ اور یورپ جیسا حال ہو سکتا ہے، یہ دو مہینے کورونا کی شدت کے ہیں، یہ کام کریں تو کورونا میں 50 فیصد کمی آ سکتی ہے، وزیراعظم عمران خان کا اہم اعلان

سوشل میڈیا‎‎

اسلام آباد (آن لائن)وزیراعظم عمران خان نے خبردار کیا ہے کہ جولائی یا اگست میں ملک میں کورونا کیسزعروج پرہوں گے، اگر احتیاط نہ کی تو بہت مشکل وقت آنے والا ہے اور ملک کو نقصان ہوگا،احتیاط نہ کی تو امریکہ اور یورپ جیسا حال ہو سکتا ہے، عوام اگر(ایس او پیز) پر عمل کریں تو کیسز تیزی سے نہیں پھیلیں گے اور پاکستان اس تباہی سے نہیں گزرے گا جو دیگر امیر ممالک پر آئی ہے،

لاک ڈاؤن سے کورونا ختم نہیں ہوتا بلکہ وبا پھیلنے کی رفتار کم ہوجاتی ہے،ہم کوشش کر رہے ہیں کہ رواں ماں 1000بیڈز وینٹی لیٹر کے ساتھ پورے ملک میں پہنچا دیں،ہم نے ایک ایپ بھی بنا دی ہے جو کہ لوگوں کو رہنمائی دے گی کہ ملک میں کس ہسپتال میں وینٹی لیٹر یا دیگر سہولیات میسر ہیں۔ پیر کووزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت کورونا وائرس کی صورتحال سے متعلق اجلاس ہوا اجلاس کے بعدمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ جب کوئی ملک لاک ڈاؤن کرتا ہے تو اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ کورونا وائرس ختم ہوجائے گا، اس کا مطلب یہ ہے کہ جس تیزی سے یہ وائرس پھیلتا ہے تو لاک ڈاؤن سے یہ پھیلاؤ کم ہوجاتا ہے کیونکہ جتنے لوگ جمع ہوتے ہیں اتنی تیزی سے یہ وائرس پھیلتا ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ لوگوں کا جمع ہونا اور باہر نکلنا بند کردیں تو وبا ختم نہیں ہوتی لیکن اس کے پھیلاؤ میں سستی آجاتی ہے ہم نے جب لاک ڈاؤن کیا تو لوگ ایک مشکل وقت سے گزرے، بیروزگاری کی انتہا ہے اور یومیہ اجرت پر کام کرنے والا طبقے کے گھروں میں مشکلات تھیں لاک ڈاؤن سے دیہا ڑی دار طبقے سمیت سب بڑے مشکل حالا ت سے گزار رہے ہیں لا ک ڈاؤن کے اثرات معیشت اور متوسط طبقے پر پڑتا ہے دنیا کا کو ئی بھی ملک جہا ں زیادہ اموات ہو ئی ان سب نے لاک ڈاؤن کھول دیا مگر ایس او پیز کے تحت امریکہ جہاں 1لا کھ سے زائد اموات ہو چکی ہیں انہو ں نے بھی کاروبار کو کھول دیا ۔ انہو ں نے کہا کہ ہما ری جووجہد اسی میں ہے کہ کورونا آہستہ سے پھیلے کورونا نے پھیلنا تو ہے مگر تیزی سے نہ پھیلے کیو نکہ اگر یہ تیزی سے پھیل گیا تو ہما رے ہسپتالو ں پر پریشر پڑے گا اگر ہم ایس او پیز پر عمل کریں تو انشااللہ ہم اس کو سنبھال لیں گے ہما ر ے خیال میں کورونا کی شدت جو لا ئی کے آخر میں یا اگست میں آئے گی اس کے بعد کیسز کم ہونا شروع ہو جائیں گے۔

وزیراعظم نے قوم سے اپیل کر تے ہو ئے کہا کہ آپ کاروبار کریں دکانیں کھولیں مگر ایس او پیز پر عملدرآمد ضرور کریں اپنے بزرگوں کے لئے جو گھر میں بلڈ پر یشر شوگر یا ہارٹ کے مریض ہیں کورونا ان کے لئے بہت خطرناک ہے۔انہو ں نے مزید کہا کہ لوگ کو رونا کو سیریس نہیں لے رہے سب کو کہنا چاہتا ہو ں اگر آپ لو گوں نے اسطرح سے بے احتیاطی کی تو ہم اپنے،بزرگوں اور بچوں کے اوپر بہت بڑا ظلم کریں گے،اس لئے جب بھی آپ گھر سے نکلیں تو ماسک پہن کر نکلیں کیونکہ یہ ثابت ہوچکا ہے کہ ماسک سے کورونا کے پھیلاؤ میں 50فیصد کمی آتی ہے۔ ہم کوشش کر رہے ہیں کہ رواں ماں 1000بیڈز وینٹی لیٹر کے ساتھ پورے ملک میں پہنچا دیں،ہم نے ایک ایپ بھی بنا دی ہے جو کہ لوگوں کو رہنمائی دے گی کہ ملک میں کس ہسپتال میں وینٹی لیٹر یا دیگر سہولیات میسر ہیں۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر