ایک کروڑ نوکریاں دینے کے دعویداروں نے عوام سے روزگار چھیننا شروع کر دیا،پاکستان ٹورازم کارپوریشن بند کرنے پر حکومت پر شدید تنقید

سوشل میڈیا‎‎

پشاور(آن لائن)قومی وطن پارٹی کے صوبائی چیئرمین سکندر حیات خان شیرپائو نے پی ٹی آئی حکومت کی طرف سے ملک بھر میں پاکستان ٹورازم ڈولپمنٹ کارپوریشن کے تحت کام کرنے والے موٹلز کوبند اور وہاں پر کام کرنے والے سینکڑوں ملازمین کوبرطرف کرنے کے فیصلہ کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ ایک کروڑ نوکریاں دینے کی دعویداروں نے عوام کو روزگار دینے کی بجائے ان سے روزگار چھیننے کا سلسلہ شروع کردیا۔

وطن کور شیرپائو میں پارٹی کے مختلف وفود کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے انھوں نے کہا کہ پی ٹی ڈی سی کے ملازمین کا اس حوالے سے کیس عدالت میں ہے جس پر عدالت نے Stay orderدیا ہواہے لیکن اس کے باوجودان کو نوکریوں سے نکالنے کا حکومتی فیصلہ سمجھ سے بالاتر ہے۔انھوں نے پی ٹی ڈی سی کے اربوں روپے مالیت کے موٹلز اوروہاں پر کام کرنے والے ملازمین کو فارغ کرنے کے حوالے خدشہ ظاہر کیا کہ فیصلہ سے ایسا لگتا ہے کہ حکومت پی ٹی ڈی سی کی اراضی کو اونے پونے داموںاپنے من پسند افراد کے حوالے کرنا چاہتی ہے ۔انھوں نے کہا کہ حکمرانوں کاکام لوگوں کو روزگارکے مواقع فراہم کرنا ہوتا ہے جبکہ پی ٹی آئی کے نااہل حکمران برسر روزگار لوگوں کو بے روزگار کرکے ان کے منہ سے آخری نوالہ بھی چھین رہی ہے۔انھوں نے کہا کہ فیصلہ سے موٹلزمیں کا م کرنے والے سینکڑوں افرادکے خاندانوں کے چولہے ٹھنڈے پڑ جائیں گے اور وہ معاشی مسائل کی لپیٹ میں آجائیں گے۔سکندر شیرپائو نے کہا کہ ہم پیسکو اورآئیسکو کی نجکاری کی بھی کسی صورت اجازت نہیں دیں گے کیونکہ یہ وہاں پر کام کرنے والے ملازمین کے مفادات کے منافی اقدام ہوگا۔ انھوں نے کہا کہ حکومت ہوش کے ناخن لے اور اس قسم کے فیصلوں سے اجتناب کرتے ہوئے عوام کی بہبود ، ریلیف اور روزگارکی فراہمی کیلئے اقدامات اٹھائے۔انھوں نے کہا کہ قومی وطن پارٹی حکومتی فیصلہ کو مسترد کرتے ہوئے ملازمین کے ساتھ مکمل یکجہتی کا اظہار کرتی ہے اور حکومت سے پر زور مطالبہ کرتی ہے کہ ملازمین کی برطرفی اور سرکاری محکموں کی نجکاری کے حوالے فیصلہ فی الفور واپس لیا جائے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر