کورونا کیسز میں کمی ، 89 علاقوں سے لاک ڈائون ہٹا دیا گیا، انتہائی اچھی خبر

سوشل میڈیا‎‎

پشاور (این این آئی)خیبر پختونخوا کے محکمہ صحت کے فوکل پرسن ڈاکٹر افتخار الدین نے کہا ہے کہ کورونا وائرس ہاٹ اسپاٹس میں کیسز کی تعداد میں نمایاں کمی کے بعد صوبے کے 89 علاقوں سے اسمارٹ لاک ڈاؤن ہٹادیا گیا ہے۔میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پشاور کے 8، مردان کے 5، نوشہرہ کے 15، باجوڑ کے 8، ایبٹ آباد کے 8، لوئر دیر کے 5، بونیر اور چارسدہ کے 4،4، ہری پور، سوات اور مالاکنڈ کے 3، 3، اپر چترال کے 2، اپر دیر اور بنوں کے ایک، ایک علاقے سے لاک ڈاؤن ہٹادیا گیا۔فوکل پرسن نےکہا کہ حکومت کی ‘اسمارٹ لاک ڈاؤن کی پالیسی’ سے کورونا وائرس کے کیسز میں 80 فیصد کمی آئی۔

انہوں نے کہا کہ مردان میں اسمارٹ لاک ڈاؤن کے علاقوں سے گزشتہ 6 روز سے کوئی کیس سامنے نہیں آیا جبکہ ضلع نوشہرہ میں 21 جون کو سامنے آنے والے 31 کیسز کے مقابلے میں گزشتہ روز صرف ایک کیس سامنے آیا۔اس حوالے سے تفصیلات بیان کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ضلع مانسہرہ سے صرف ایک کیس سامنے آیا جبکہ 22 جون کو 32 کیسز سامنے آئے اور باجوڑ میں 16 جون کو سامنے آنے والے 12 کیسز کے مقابلے میں گزشتہ روز 3 کیسز رپورٹ ہوئے۔انہوں نے کہا کہ سوات اور پشاور سے سامنے آنے والے کیسز کی تعداد میں 70 فیصد کمی آئی۔ خیبر پختونخوا کے محکمہ صحت کے فوکل پرسن ڈاکٹر افتخار الدین نے کہا ہے کہ کورونا وائرس ہاٹ اسپاٹس میں کیسز کی تعداد میں نمایاں کمی کے بعد صوبے کے 89 علاقوں سے اسمارٹ لاک ڈاؤن ہٹادیا گیا ہے۔میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پشاور کے 8، مردان کے 5، نوشہرہ کے 15، باجوڑ کے 8، ایبٹ آباد کے 8، لوئر دیر کے 5، بونیر اور چارسدہ کے 4،4، ہری پور، سوات اور مالاکنڈ کے 3، 3، اپر چترال کے 2، اپر دیر اور بنوں کے ایک، ایک علاقے سے لاک ڈاؤن ہٹادیا گیا۔فوکل پرسن نے کہا کہ حکومت کی ‘اسمارٹ لاک ڈاؤن کی پالیسی’ سے کورونا وائرس کے کیسز میں 80 فیصد کمی آئی۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

    اوپر