عارضی طور پر بھرتی ہونے والے 100 کے قریب اسٹاف نرسز کا پانچ ماہ سے تنخواہیں  نہ ملیں ، تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے عملہ کتنے فیصد رشوت مانگ رہا ہے ، شدید احتجاج ، نرسز نے حیرت انگیز الزام عائد کر دیا

سوشل میڈیا‎‎

سانگھڑ (این این آئی)کرونا کنٹرول کووڈ 19ٹیم میں عارضی طور پر بھرتی ہونے والے 100 کے قریب اسٹاف نرسز کو پانچ ماہ سے تنخواہیں نہ ملنے کے خلاف اسٹاف نرسز کا احتجاج ٹریژری آفس عملہ تنخواہ کی ادائیگی میں رشوت طلب کررہا ہے،نرسزز کا الزام،تفصیلات کے مطابق عیدالفطر کے بعد عید الاضحی آگئی مگر سانگھڑ کے کرونا کنٹرول کووڈ 19ٹیم میں عارضی طور پر بھرتی ہونے والے سو کے قریب اسٹاف نرسز کو

پانچ ماہ سے تنخواہیں نہ ملیں جس پر اسٹاف نرسز نے احتجاج کیا مبینہ طور پر ٹریژری عملہ تنخواہوں کی ادائیگی کیلئے تیس فیصد رشوت طلب کررہا  ہے اس موقع پر اسٹاف نرسز نور احمد، ریاض، شینا ملاح ودیگر کا کہنا تھا کہ ہم تین ماہ کیلئے عارضی طور پر بھرتی ہوئے سندھ حکومت کی جانب سے ہم سے کرونا وائرس کو کنٹرول کرنے والے پروگرام کووڈ 19ٹیم کے طور پرخدمات لی جارہی ہیں ہمارا تین ماہ مکمل ہونے کے بعد دوبارہ کانٹریکٹ تین ماہ کیلئے بڑھایا گیا اب ہمیں خدمات پیش کرتے کرتے  پانچ ماہ ہوگئے لیکن ہمیں ابھی تک تنخواہیں نہیں جاری کی گئی جس کے باعث عیدالفطر کے بعد عید الاضحی بھی آگئی لیکن تنخواہیں جاری نہیں کی گئیں جس سے ہمارے گھروں میں فاقہ کشی کی صورتحال ہوگئی ہے جبکہ دوسری جانب کووڈ 19 میں اسٹاف نرسز خدمات سرانجام دینے والے ملازمین سے مبینہ طور پر محکمہ ٹریژری 30 فیصد رشوت مانگ رہے ہیں جس سے تنخواہوں کی ادائیگی میں تاخیر ہورہی ہے ہمارا مطالبہ ہے کہ ہمیں فوری تنخواہیں جاری کی جائیں تاکہ ہم بھی عید مناسکیں۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر