محمد حفیظ کی پاکستانی ٹیم میں واپسی، انضمام اور سرفراز کی حمایت کے باوجود کوچ مکی آرتھر نے کیوں مخالفت کی؟اندرونی کہانی سامنے آگئی

کھیل

لاہور( آن لائن )پاکستانی ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کی مخالفت کے باوجود قومی سلیکشن کمیٹی اور کپتان سرفراز احمد کی کوششوں نے ٹیسٹ اوپنر محمد حفیظ کو آسٹریلیا کیخلاف سیریز کیلئے 18ویں کھلاڑی کی حیثیت سے پاکستان ٹیم میں شامل کرانے میں اہم کردار ادا کیا۔بظاہر ایسا لگ رہا کہ مکی آرتھر کا سخت گیر موقف ان کے لئے مشکلات پیدا کررہا ہے۔تاہم اب یہ مطالبہ زور پکڑ رہا ہے کہ دو ٹیسٹ کیلئے 18کھلاڑی زیادہ ہیں۔ان فٹ اور آٹ آف فارم کھلاڑیوں کو پاکستان واپس بھیجنے کی تجویز ہے۔ذمے دار ذرائع کا کہنا ہے کہ مکی آرتھر

محمد حفیظ کو ٹیم میں شامل کرنے کے حق میں نہیں تھے تاہم قائد اعظم ٹرافی میں سوئی ناردرن گیس کی جانب سے حفیظ نے پشاور کیخلاف ڈبل سنچری بناکر اپنا کیس مضبوط کیاجس کے بعد انضمام الحق اور سرفراز احمد نے ہیڈ کوچ کو قائل کرکے دو سال بعد محمد حفیظ کو ٹیسٹ ٹیم میں شامل کرایا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ مکی آرتھر بار بار یہ بھی کہتے رہے کہ حفیظ جیسے ہی باؤلنگ کریگا انکا ایکشن رپورٹ ہوجائے گا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ یاسر شاہ کے ساتھ دوسرے لیگ سپنر شاداب خان مکمل فٹ نہیں ہیں۔مکی آرتھر اتوار سے شروع ہونیوالے ٹیسٹ کیلئے یاسر شاہ کے ساتھ شاداب خان کو کھلانا چاہتے ہیں جبکہ انضمام الحق اور سرفراز احمد بائیں ہاتھ کے چار آسٹریلوی بیٹسمینوں کی موجودگی میں آف سپنر بلا ل آصف کو کھلانے کی حق میں ہیں۔مکی آرتھر محمد عباس اور وہاب ریاض کے ساتھ فہیم اشر ف کو آل راؤنڈر کی حیثیت سے کھلانے کی حق میں دکھائی دیتے ہیں تاہم بلال آصف کی شمولیت کے امکانات زیادہ ہیں۔۔دبئی میں پاکستانی ٹیم کے نیٹ پر محمد حفیظ اور بلال آصف طویل بولنگ سیشن کراتے ہوئے دکھائی دیئے۔۔دبئی میں اتوار سے شروع ہونیوالے پہلے ٹیسٹ کیلئے پاکستان کے ممکنہ گیارہ کھلاڑی امام الحق،محمد حفیظ،اظہر علی،اسد شفیق،بابر اعظم،حارث سہیل، سرفراز احمد(کپتان)بلال آصف، وہاب ریاض،محمد عباس اور یاسر شاہ ہوں گے۔

اس وقت زیادہ پڑھی جانے والی خبریں

اوپر